لیاری جنرل ہسپتال میں کالج سٹاف اور نرسنگ سٹاف کے مایبن تصادم، نرسز کا احتجاج

کراچی کے علاقے لیاری کے جنرل ہسپتال میں‌ بینظیر بھٹومیڈیکل کالج اور ہسپتال سٹاف کے مابین تصادم کے باعث جنرل ہسپتال لیاری میدان جنگ بن گیا. ڈاکٹرز اور نرسز نے کالج عملہ کی طرف سے تشدد کئے جانے پر احتجاج شروع کر رکھا ہے.

احتجاج کرنے والے نرسنگ سٹاف کا موقف ہے کہ مشتعل افراد نے اسپتال کے میل اور فیمیل نرسز پر تشددکیا، علاج کےلئے آنے والے مریض‌اور ڈاکٹرز بھی جان بچا کر بھاگنے پر مجبورہوئے.

مظاہرہین کا کہنا تھا کہ ان پر شہید بینظیر بھٹو میڈیکل کالج کے ملازمین نے حملہ کیا تھا،کالج کے ملازمین نے اسپتال کے فیمیل اسٹاف کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا.

انکا کہنا تھاکہ لیاری جنرل اسپتال میں قائم کورونا مریضوں کیلئے آئسولیشن سینٹر وجہ تنازعہ بن چکا ہے. کورونا آئسولیشن سینٹر اسپتال کے بجائے کالج کے زیر انتظام ہے.

مظاہرین کا الزام ہے کہ کالج انتظامیہ اسپتال کے معاملات میں مداخلت کررہی ہے. اسپتال میں ادارہ برائے قلب کے بالائی حصے میں کورونا کے مریضوں کیلئے آئیسولیشن سینٹر قائم ہے، کورونا وائرس کے مریض اور دل کے امراض میں مبتلا مریضوں کیلئے ایک ہی داخلی راستہ ہے. کورونا کےمریضوں کی وجہ سے دیگر مریض بھی متاثر ہوسکتے ہیں.

مظاہرین کا کہنا ہے کہ آئسولیشن سینٹر سے اب تک عملے کے چار افراد کورونا وائرس کا شکر ہوگئے.انکا کہنا تھا کہ کورونا آئسولیشن سینٹر کا فوکل پرسن کالج کے برطرف ملازم کو لگایا گیا ہے.

Leave a Reply

Translate »
%d bloggers like this: