شیخ زید ہسپتال راولاکوٹ : مختلف شعبہ جات میں ایف سی پی ایس اور ایم سی پی ایس ٹریننگ کی منظوری دیدی گئی

کالج آف فزیشن اینڈ سرجنز پاکستان (سی پی ایس پی )نے شیخ زید ہسپتال راولاکوٹ (سی ایم ایچ)میںدو شعبہ جات میں ایف سی پی ایس کی چار سالہ ٹریننگ جبکہ چار شعبہ جات میںایم سی پی ایس کی دو سالہ ٹریننگ کی منظوری دے دی ہے۔ ایف سی پی ایس ٹریننگ کے دوران ڈاکٹروں کو وفاق اور صوبوں کے برابر وظیفہ بھی ادا کیا جائے گا۔ جبکہ کسی قسم کی کوئی فیس چارج نہیں کی جائیگی۔

واضح رہے کہ شیخ زید ہسپتال میں سرجری اور میڈیسن کے شعبہ جات میں گزشتہ سال سے ہی ایف سی پی ایس کی تربیت کا آغاز کر دیا گیا تھا۔ اس طرح مجموعی طور پر چار شعبہ جات میں ایف سی پی ایس اور چار ہی شعبہ جات میں ایم سی پی ایس کی تربیت دی جائیگی۔

سی پی ایس پی کی جانب سے شیخ زید ہسپتال راولاکوٹ کےلئے دو الگ الگ ایکریڈیٹیشن لیٹرز جاری کئے ہیں۔ گائناکالوجی اور بچوں کے امراض کے شعبہ جات میں چار سالہ ایف سی پی ایس سپیشلائزیشن ٹریننگ کی تابع شرائط منظوری دی گئی ہے۔

اسی طرح ایک دوسرے لیٹر کے مطابق شیخ زید ہسپتال میں گائنا کالوجی، بچوں کے امراض، آنکھوں کے امراض اور ای این ٹی (ناک ، کان، گلے کے امراض) کے مجموعی طور پر چار شعبہ جات میں ایم سی پی ایس کے دو سالہ ڈپلومہ ٹریننگ پروگرام کی بھی تابع شرائط منظوری دی گئی ہے۔

ایکریڈیٹیشن سٹیٹس کو جاری رکھنے کےلئے ہر پانچ سال بعد ری انسپیکشن لازمی ہو گی۔ اور ادارہ کے سربراہ کو ایکریڈیٹیشن زائد المعیاد ہونے سے تین ماہ قبل دوبارہ وزٹ کےلئے اپلائی کرنا پڑے گا۔

خطوط کے مطابق تربیت پانے والے امیدواران کا داخلہ سی پی ایس پی کی پالیسی کے مطابق کیا جائے گا۔ تربیت پانے والے امیدواران کو ٹریننگ شروع کرنے کے تیس روز کے اندر اندر کالج کے رجسٹریشن اینڈ ریسرچ سیل (آر اینڈ آر سی) میں رجسٹریشن کروانی ہوگی۔ ٹریننگ پریڈ رجسٹرڈ اور سپروائزڈ ہوگا۔ آر اینڈ آر سی کو سپروائزر کنسلٹنٹس کے تبادلے اور تعیناتی سے متعلق آگاہ کیا جانا ضروری ہوگا تاکہ تربیت پانے والے امیدواران کی تربیت متاثر نہ ہو۔

ایف سی پی ایس کی تربیت پانے والے امیدواران کو وفاقی اور صوبائی حکومتوں میں متعین کردہ وظیفہ کے مطابق وظیفہ دیا جائے گا۔ اعزازی تربیت کی اجازت نہیں ہو گی۔ ٹیویشن فیس یا اس کے علاوہ کوئی بھی فیس وصول نہیں کی جائیگی۔ جبکہ ایم سی پی ایس کرنے والے امیدواران کو وظیفہ دینے یا کوئی فیس لینے سے متعلق کوئی ذکر نہیں کیا گیا ہے۔

ایف سی پی ایس کرنے والے امیدوران کو ادارہ ٹیچرز ، فیلوز، سپروائزرز کو سی پی ایس پی کی اکیڈمک سرگرمیوں جن میں ٹیچنگ، ٹریننگ ، ورکشاپس، کورسز،امتحانات وغیرہ شامل ہیں، کےلئے نہ صرف اجازت دے گا بلکہ سہولیات بھی فراہم کرے گا۔ چاہے وہ سرگرمیاں اندرون ملک ہوں یا بیرون ملک منعقد ہو رہی ہوں۔ ان سرگرمیوں میں شامل افراد کو ادارہ کے قواعد و ضوابط کے مطابق ٹی اے ڈی اے بھی دیا جائے گا۔

تربیت پانے والے امیدواران کو چھ ماہ میں پندرہ ایام کی چھٹیاں دی جائینگی لیکن وہ یہ چھٹیاں یکمشت نہیں کر سکیں گے۔ میٹرنٹی لیو تین ماہ تک حاصل کی جا سکے گی، ٹریننگ کا حرج پورا کرنے کےلئے تین ماہ اضافی تربیت حاصل کرنے کے بعد ہی ایف سی پی ایس امتحانات میں شامل ہونے کی اجازت ملے گی۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال ہی شیخ زید ہسپتال میں سرجری اور میڈیسن کے شعبہ جات میں ایف سی پی ایس ٹریننگ کی منظوری دی گئی تھی۔ ایک سال بعد مزید دو شعبہ جات میں ایف سی پی ایس اور چار شعبہ جات میں ایم سی پی ایس کی تربیت کو اہم کامیابی قرار دیا جا رہا ہے۔

ایم ایس شیخ زید ہسپتال ڈاکٹر نسیم حسرت کا کہنا ہے کہ اب شیخ زید ہسپتال میں علاج معالجے کی سہولیات میں مزید اضافہ ہو جائے گا۔ سپیشلائزیشن کرنے والے ڈاکٹروں کے سپروائزرز اور ٹرینرز کی شیخ زید ہسپتال میں موجودگی کی وجہ سے ایسے مریضوں کا علاج ممکن ہو پائے گا جنہیں علاج معالجہ کےلئے راولپنڈی اسلام آباد جانا پڑتا تھا۔

ڈاکٹر نسیم حسرت نے ان منظوریوں کو نہ صرف شیخ زید ہسپتال اور میڈیکل کالج کےلئے بلکہ پورے پونچھ ڈویژن کے لوگوں کےلئے ایک اہم کامیابی قرار دیا ہے۔ انکا کہنا ہے کہ اب شیخ زید ہسپتال بڑے ٹیچنگ ہسپتالوں کے مقابلے میں آجائے گا۔ ماہر ڈاکٹرز اور پروفیسرز کی موجودگی میں مریضوں کا جدید بنیادوں پر علاج معالجہ ہو گا۔ شیخ زید ہسپتال اب جو سہولیات مریضوں کو پہنچائے گا وہ راولپنڈی اسلام آباد کے بڑے ہسپتالوں میں بھی نہیں مل پائیں گی۔

انکا کہنا تھا کہ شیخ زیدہسپتال کو جدید طرزپر تعمیر کیا گیا ہے ، ہر طرح کی مشینری اور سہولیات موجود ہیں، ماہر ڈاکٹرز اور پروفیسرز کی کمی بہر حال موجود تھی ، جو اب نہیں رہے گی۔ ایف سی پی ایس اور ایم سی پی ایس کی تربیت حاصل کرنے والے ڈاکٹرز بھی ڈاکٹروں کا بوجھ کم کرنے میں مدد دیں گے۔ جب ایک مرض کے کئی ماہر ڈاکٹر ہوں تو مریض تقسیم ہونگے اور وہ ڈاکٹرز مریضوںکا بہتر علاج معالجہ کر سکیں گے۔

Leave a Reply

Translate »
%d bloggers like this: