کولگام: جھڑپ میں‌دو عسکریت پسند ہلاکت کے بعدہنگامے پھوٹ پڑے

بھارتی زیرانتظام جموں کشمیر میں جنوبی کشمیر کے ضلع کولگام کے علاقے وان پورہ میں بھارتی سکیورٹی فورسز اور عسکریت پسندوں کے درمیان آپریشن کے دوران ایک جھڑپ میں حزب المجاہدین سے تعلق رکھنے والے دو عسکریت پسند مارے گئے ہیں۔جس کے بعد علاقے میں‌مظاہرین نے سکیورٹی فورسز پر پتھراؤ کیا اور انکا گھیراؤ کیا. مظاہرین اور فورسز کے تصادم میں‌دو مظاہرین کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں.

ساوتھ ایشین وائر کے مطابق پولیس کا کہنا ہے کہ سی آر پی ایف، ایس او جی، آر آر سکیورٹی فورسز اور عسکریت پسندوں کے درمیان جاری تصادم کے دوران دو عسکریت پسندوں کو گھیرے میں لے لیا گیا۔یہ جھڑپ صبح7:10پر شروع ہوئی۔جس میں حزب المجاہدین کے دو عسکریت پسند شاکر رحمان اور پرواز پنڈت مارے گئے۔

کولگام میں جھڑپ کے مقام کے قریب ہنگامے پھوٹ پڑے ۔ جہاں سرکاری فورسز کے ساتھ جھڑپوں کے دوران زخمی ہونے والے دو مظاہرین رئیس احمد ولد محمد اشرف اور یاسر حمید ولد عبد الحمید کو ہسپتال منتقل کردیا گیا۔

کولگام میں یہ تصادم ضلع کے منگام کے علاقے میں دو عسکریت پسندوں کی ہلاکت کے بعد سامنے آیا ہے۔

حکام نے کہا کہ راشٹریہ رائفلز ، ریاستی پولیس اور سنٹرل ریزرو پولیس فورس کے اہلکاروں کی ایک مشترکہ ٹیم جنوبی کشمیر کے کولگام کے علاقے وار پورہ میں آپریشن میں شامل تھی۔
عہدیداروں نے بتایا کہ سرچ آپریشن ابھی جاری ہے اور ضلع میں انٹرنیٹ سروس معطل کردی گئیں۔

Leave a Reply

Translate »
%d bloggers like this: