بھارت:‌وزیراعظم نریندر مودی کا 270 ارب ڈالر کے معاشی پیکیج کا اعلان

انڈیا کے وزیراعظم نریندر مودی نے کورونا وائرس کے اثرات سے نمٹنے اور معیشت کی بحالی کے لیے 270 ارب ڈالر کے معاشی پیکج کا اعلان کیا ہے۔

انڈیا میں کورونا وائرس اور کئی ہفتوں سے جاری ملک گیر لاک ڈاؤن کی وجہ سے معاشی سرگرمیاں بری طرح متاثر ہوئی ہیں اور بے روزگاری میں اضافہ ہوا ہے۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کے مطابق ‘منگل کو ٹی وی پر قوم سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی نے کہا کہ ‘یہ معاشی پیکج دراصل انڈیا کی خود انحصاری کی تحریک ہے۔’

وزیراعظم مودی کی جانب سے اعلان کردہ معاشی پیکج انڈیا کی مجموعی قومی پیداوار (جی ڈی پی) کا 10 فیصد بنتا ہے اور اس کا اعلان ایسے وقت میں کیا گیا ہے جب ملک میں لاک ڈاؤن کے 50 روز مکمل ہونے کو ہیں۔

انڈیا میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 70 ہزار سے زائد ہو گئی ہے جب کہ 2 ہزار 200 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

اپنے خطاب میں وزیراعظم نریندر مودی کا کہنا تھا کہ ‘یہ پیکج کاٹیج انڈسٹری، چھوٹی اور درمیانے درجے کی صنعتوں کے لیے ہے۔’

‘اس پیکج میں وہ دو ارب ڈالر بھی شامل ہیں جن کا اعلان مارچ کے آخر میں لاک ڈاؤن کے آغاز پر کیا گیا تھا۔’

انہوں نے کہا کہ ‘وزیر خزانہ نرملا ستھارامن آئندہ چند روز میں پیکج کی تفصیلات سے آگاہ کریں گی۔’

انڈیا میں حکومت نے ایک ارب 30 کروڑ کی آبادی میں کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے لاک ڈاؤن کر رکھا ہے، تاہم لاک ڈاؤن کی وجہ سے لاکھوں افراد خاص طور پر غریب اور نقل مکانی کرنے والے افراد کا روزگار بری طرح متاثر ہوا ہے، ان میں سے بے شمار لوگوں کی ملازمتیں بھی چلی گئی ہیں۔

وزیراعظم مودی نے اپنے خطاب میں مزید کہا کہ ‘اس ساری صورت حال میں دیہاڑی دار اور اپنا گھر بار چھوڑ کر روزگار کے حصول کے لیے جانے والے افراد کو بہت زیادہ مشکلات کا سامنا کرنا پڑا، اور اب یہ ہمارا فرض ہے کہ ہم ان کے لیے کچھ کریں۔’

انہوں نے کہا کہ ‘لاک ڈاؤن کا اگلا مرحلہ کئی اعتبار سے مختلف ہوگا۔’

یاد رہے کہ انڈیا میں لاک ڈاؤن میں دو مرتبہ توسیع ہو چکی ہے اور اس کی مدت 18 مئی کو ختم ہو رہی ہے۔

Leave a Reply

Translate »
%d bloggers like this: