پی این اے کے زیر اہتمام ریلی و جلسہ: جھوٹی انا کے بتوں کو پاش پاش نہ کیا تونسلوں کے مجرم ہونگے، مقررین

پیپلز نیشنل الائنس کے زیراہتمام شہید کشمیر محمدمقبول بٹ کا36واں یوم شہادت عقیدت و احترام کے ساتھ منایا گیا ، راولاکوٹ میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ مقبول بٹ شہید کی جدوجہد ہم سے تقاضا کرتی ہے کہ ہم متحدہ و منظم ہو کر دھرتی ماں کی آزادی کیلئے جدوجہد کریں اگر ہم مقبول بٹ شہید کی جدوجہد کے وارث ہیں تو ہمیں انا پرستی کے خول سے نکل کر مشترکہ مقاصد کے حصول کیلئے منظم ہونا ہوگا اگر آج بھی ہم متحد نہ ہوئے تو ہم سے ہماری شناخت چھین لی جائے گی اور ہم اپنی آنے والی نسلوں کے مجرم ہونگے۔

قبل ازیں کالج گراﺅنڈ راولاکوٹ سے ریلی نکالی گئی جس کی قیادت سیکرٹری جنرل پی این اے سردار لیاقت حیات ، چیئرمین جے کے ایل ایف سردار صابر کشمیری ایڈووکیٹ ، سروراجیہ انقلابی پارٹی کے سیکرٹری جنرل سجاد افضل، جے کے پی این پی کے ناصر لبریز، جے کے ایس ایل ایف کے طارق عزیز اوردیگر کر رہے تھے۔ ریلی نے پورے شہر کا چکر لگایا اور مین چوک میں جلسہ عام منعقد ہوا ۔

جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے لیاقت حیات، صابر کشمیری ایڈووکیٹ، سجاد افضل، ناصر لبریز، جاوید جان، صدام حیات، ذوالفقار عارف اور دیگر نے خطاب کیا جبکہ نظامت کے فرائض جے کے ایس ایل ایف کے رہنما طار ق عزیز نے سرانجام دیئے۔

مقررین نے کہا کہ مقبول بٹ شہید مظلوم و محکوم کشمیری قوم کا ہیرو ہے اور اُس نے غلامی کے گور اندھیروں میں ڈوبی ہوئی قوم کو منزل آزادی کا راستہ دکھایا ۔ آج انتہائی افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ ایک طرف سامراج کشمیر کی بندر بانٹ کے ایجنڈے پر متفق ہو چکے ہیں اور دوسری طرف مقبول بٹ کے پیروکار بھی تقسیم کا شکار ہیں۔

ضرورت اس امر کی ہے کہ تمام آزادی پسند ایک پلیٹ فارم پر متحد ہوتے اور تقسیم کشمیر کی سازشوں کا ڈٹ کر مقابلہ کرتے مگر ہم اپنی اپنی انا کے حصار میں مقید ہو کر رہ گئے ہیں۔ مقررین نے کہا کہ اگر اب بھی ہم نے اپنی جھوٹی انا کے بتوں کو پاش پاش نہ کیا تو ہم اپنے آنے والی نسلوں کے مجرم ہوں گے۔

Leave a Reply

Translate »
%d bloggers like this: