حمید باشانی کی ایمنسٹی انٹرنیشنل کے سیکرٹری جنرل سے ملاقات: کشمیر پر نظر ہے، الیکس نیو کی گفتگو

ٹورنٹو کینیڈا میں مقیم جموں کشمیر کے معروف دانشور ، کالم نگار بیرسٹر حمید باشانی نے ایمنسٹی انٹرنیشنل کینیڈا کے سیکریٹری جنرل Alex Neve سے ملاقات کر کہ انھیں ریاست جموں کشمیر کے تینوں حصوں میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کے متعلق آگاہ کیا.

انہوں نے سیکریٹری جنرل کو بتایا کہ بھارتی زیر انتظام جموں کشمیر میں 5 اگست کے بعد انڈین حکومت نے آٹھ ملین شہریوں کو بنیادی انسانی حقوق سے محروم کر رکھا ہے، چار ہزار سے زائد افراد کو گرفتار کیا گیا ہے ،جس میں سیاسی راہنما کارکن ہر شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد اور کم عمر بچے بھی شامل ہیں.

انہوں نے Alex Neve کو آزاد کشمیر میں انسانی حقوق کی صورتحال کے بارے میں اگاہ کرتے ھوے بتایا کہ لوگوں کو بنیادی سیاسی اور معاشی حقوق حاصل نہیں ہیں آزادی اظہار راۓ اور آزادی اجتماع پر پابندی لگائی جاتی ہے اور ریاست کے سرکاری بیانیہ کے خلاف بات کرنے کو جرم سمجھا جاتا ہےآزادی پسند سیاسی کارکنوں کو تشدد اور گرفتاریوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے .

انہوں نے 22 اکتوبر کو مظفرآباد میں پی این اے کے پر امن مارچ پر پولیس کے تشدد گرفتاریوں ایک شخص کے جاں بحق ہونے اور پریس کلب پر حملے کے متعلق بھی اگاہ کیا.

بیرسٹر حمید باشانی نے گلگت بلتستان میں شیڈول چار کی آڑ میں سیاسی کارکنوں کی نقل و حمل پر پابندی اور بابا جان اور دوسرے سیاسی لوگوں پر جھوٹے مقدمات قائم کر کہ چالیس سال سے اسی سال تک سزا دینے کے متعلق اگاہ کیا.

Alex Neve نے بتایا کہ وہ جموں کشمیر کے متعلق صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور ایمنسٹی انٹرنیشنل انسانی حقوق کے لئے اپنا کردار ادا کرے گی

Leave a Reply

Translate »
%d bloggers like this: