صدر ٹرمپ دنیا کے خطرناک ترین رہنما ہیں: جرمن سروے

جرمنی میں ہونے والے ایک سروے YouGov کے نتائج کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو روسی صدر ولادی میر پیوٹن اور شمالی کوریا کے لیڈر کم یونگ ان سے زیادہ خطرناک سمجھا جاتا ہے۔ تفصیلات کے مطابق جرمنی میں کواسے جانے والے اس سروے میں دو ہزار سے زیادہ جرمن افراد کا انٹرویو کیا گیا۔ اس سروے میں حصہ لینے والے افراد کا ماننا تھا کہ صدر ٹرمپ ایرانی سپریم لیڈرآیت اللہ خامنائی اور چینی صدر شی جن پنگ سے بھی زیادہ خطرناک ہیں۔ اس سروے کا اہتمام نیوز ایجنسی ڈی پی اے کی جانب سے کیا گیا تھا۔ اکتالیس فیصد کا کہنا تھا کہ ان پانچ عالمی رہنماؤں میں سے صدر ٹرمپ دنیا کے امن کے لیے سب سے بڑا خطرہ ہیں۔ سترہ فیصد لوگوں نے کم یونگ ان، پوٹن اور خامنائی کو کم خطرناک تصور کرتے ہوئے ریٹنگ پر انہیں آٹھ فیصد پر جبکہ شی جن پنگ کو سب سے کم خطرناک کہتے ہوئے سات فیصد پر رکھا۔

اس سروے کے گذشتہ سال کے نتائج میں تھوڑی بہت تبدیلی دیکھنے میں آئی ہے۔ اس وقت رائے دہندگان نے صدر ٹرمپ کو اڑتالیس فیصد خطرناک قرار دیا تھا۔۔ اس وقت بھی انھوں نے کم یونگ ، پوٹن اور ٹرمپ میں سے ڈونلڈ ٹرمپ کو ہی سب سے زیادہ خطرناک قرار دیا تھا۔
رواں سال یہ سروے سولہ سے اٹھارہ دسمبر کے درمیان کراویا گیا اور اس میں دو ہزار چوبیس جرمن افراد نے حصہ لیا۔

کینٹر انسٹیٹیوٹ کے تحت ایک دیگر رائے شماری میں فنک میڈیا گروپ کو پتہ چلا کہ جرمنوں کو اپنی چانسلرانگیلا میرکل سے زیادہ فرانسیسی صدر ماکرون پر بھروسہ ہے۔ اس سروے میں حصہ لینے والے افراد نے فرانس کے صدر امانوئل ماکروں کو ستاون فیصد جبکہ انگیلا میرکل کو ترپن فیصد ووٹ دیے۔

Leave a Reply

Translate »
%d bloggers like this: