لندن: پاکستانی ہائی کمیشن کے سامنے احتجاج، یادداشت وصول نہ کرنے پر دفتر میں‌ہنگامہ آرائی

برطانیہ کے شہر لندن میں‌پاکستانی ہائی کمیشن کے سامنے پیپلزنیشنل الائنس کے زیر اہتمام مظفرآباد میں‌پر امن سیاسی کارکنان پر پولیس تشدد کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، دفتر کے ذمہ داران کی جانب سے یادداشت وصول نہ کئے جانے پر دفتر میں‌ہنگامہ آرائی ہوئی جس کے بعد یادداشت وصول کی گئی.

Posted by Daily Mujadala on Thursday, October 24, 2019

پاکستانی ہائی کمیشن کے سامنے احتجاجی مظاہرہ میں‌ پیپلز نیشنل الائنس میں‌شامل تنظیموں‌کے ذمہ داران نے شرکت کی، شدید بارش کے باوجود مظاہرین نے پاکستانی زیر انتظام جموں‌کشمیر کے دارالحکومت میں‌ پر امن سیاسی کارکنوں‌پر پولیس کے لاٹھی چارج، آنسو گیس کی شیلنگ اور گرفتاریوں‌کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی، مظاہرین نے کشمیر کی مکمل آزادی، خودمختاری اور طبقات سے پاک معاشرے کے قیام کے حق میں بھی نعرے بازی کی. مظاہرین نے دونوں‌ملکوں سے آزادی کے نعرے بلند کئے. جبکہ مظفرآباد واقعہ کے خلاف یادداشت پاکستانی ہائی کمشنر کو پیش کرنے کےلئے مظاہرین کا وفد جب دفتر کے اندر گیا تو یادداشت وصول کرنے میں‌لیت و لعل سے کام لئے جانے پراین ایس ایف کے سابق صدر خواجہ حسن محمود اور پیراعجاز نے ہنگامہ آرائی کی، جس کے بعد یادداشت وصول کر لی گئی.

مظاہرین میں جموں‌کشمیر لبریشن فرنٹ (صغیر) کے سردار آفتاب ایڈووکیٹ، سردار مہتاب ایڈووکیٹ، کشمیر نیشنل پارٹی کے عباس بٹ، نیشنل عوامی پارٹی کے خواجہ حسن محمود، امجد اشرف، شاہد ہاشمی، ندیم اسلم، ساجد شاہین، رقیب کشمیری، جے کے این ایس ایف کے آصف سید، لبریشن فرنٹ (یاسین) کے تحسین گیلانی کے علاوہ طاہر بوستان، پیر اعجاز، راجہ آزاد، سردار مشتاق خان، مشتاق مغل، ذوالفقار احمد، نصیر مغل، تبسم اسحاق، واجد ایوب، شوکت یوسف، ظہیر احمد اور دیگررہنماء شامل تھے.

Leave a Reply

Translate »
%d bloggers like this: