عرفان جلیل قتل کیس: راولاکوٹ پولیس نے تینوں‌ ملزمان اتوار کی صبح ساڑھے تین بجے گرفتار کر لئے

پاکستانی زیر انتظام کشمیر کے شہرراولاکوٹ میں‌ہونےوالی قتل کی واردات میں‌ ملوث تینوں‌ملزمان کو پولیس نے اتوار کی صبح ساڑھے تین بجے گرفتار کر لیا.
ایس ایچ او تھانہ سٹی راولاکوٹ سردار محمد اعجاز خان نے روزنامہ مجادلہ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ اتوار کی صبح تین بجے پولیس نے تینوں‌ملزمان اوبامہ مشتاق ولد محمد مشتاق سکنہ راولاکوٹ سرکٹ ہاؤس، بلال اخلاق ولد محمد اخلاق سکنہ پوٹھی بالا، سارم افتخار ولد محمد افتخار سکنہ متیالمیرہ کو گرفتار کر لیا ہے.
سپورٹس کمپلیکس میں‌ نوجوان کے قتل کے واقعہ کا ڈی آئی جی پونچھ ریجن محمد طاہر قریشی اور ایس ایس پی پونچھ چوہدری ذوالقرنین نے سخت نوٹس لیتے ہوئے ملزمان کی فوری گرفتاری کی ہدایات جاری کر رکھی تھیں.
ایس ایچ او تھانہ سٹی کی سربراہی میں‌ پولیس پارٹی نے فوری طور پر ملزمان کی تلاش شروع کر دی تھی اورصبح ساڑھے تین بجے کے قریب تینوں ملزمان کو پولیس نے گرفتار کر لیا.

مقتول عرفان جلیل کی فائل فوٹو

یاد رہے راولاکوٹ میں واقع خان اشرف خان سپورٹس کمپلیکس کے فٹ بال گراؤنڈ میں ہفتہ کی شام نوجوانوں‌کے مابین مسلح تصادم کے نتیجے میں‌خنجر لگنے سے ایک نوجوان ہلاک ہو گیا تھا.
گرین ٹاؤن راولاکوٹ کا رہائشی عرفان جلیل نامی نوجوان تصادم کے دوران خنجر لگنے سے شدید زخمی ہو گیا تھا، جسے شیخ‌زید ہسپتال راولاکوٹ منتقل کیا گیا لیکن وہ زخموں‌کی تاب نہ لا سکا اور جان کی بازی ہار گیا.
پولیس نے مقتول کی نعش تحویل میں‌لیتے ہوئے پوسٹ مارٹم کروانے کے بعد نعش ورثاء کے حوالے کر دی تھی.
مقتول عرفان جلیل گرین ٹاؤن راولاکوٹ کا رہائشی تھا اورایک مقامی کیبل ٹی وی نیٹ ورک کےساتھ ملازمت کرتا تھا، مقتول فٹ بال کا کھلاڑی بھی تھا اورمقامی فٹ بال کلب کی بھی نمائندگی کرتا تھا. .
آج اتوار کے روزعرفان جلیل کی میت نماز جنازہ کی ادائیگی کے بعد گرین ٹاؤن راولاکوٹ میں سپردخاک کی جائیگی.

اپنا تبصرہ بھیجیں